تذکرہ مِیر کا غالب کی زباں تک آیا

 
Posted by:Zeshan

تذکرہ مِیر کا غالب کی زباں تک آیا 
اعترافِ ہُنر اربابِ ہُنر کرتے ہیں 

باقرزیدی

Advertisement