خلِش پہ صبر کا عنصر تھا غالِب آنے کو

 
Posted by:Zeshan

خلِش پہ صبر کا عنصر تھا غالِب آنے کو 
کِھلے گُلاب نے چہرہ دِکھا دِیا مجھ کو

شفیق خلش

Advertisement